ختم خواجگان، ماہ شعبان، بمقام مالو جہلم، 08 جون 2014

پیار کرتا ہے نیازی یہ زمانہ مجھ سے

یہ میری ماں کی دعاوْں کا اثر لگتا ہے

سفرِ جہلم کی چند یادیں

اپنے والدین سے عقیدت و احترام کا احساس، حضرت میاں محمد عالم رح نقشبندی کی تعلیمات و سنت سے نمایاں ہے۔

آپ رح ہر سال اپنے والدین کی تربت پر حاضری کا شرف حاصل کیا کرتے اور اس عقیدت میں سالانہ عرس مبارک کی تقریب کا انعقاد فرماتے تھے، جس میں سہرا بندی، ختم خواجگان، تلاوتِ قرآن پاک، حمد و نعت، درود و سلام کا نظرانہ پیش کیا جاتا تھا۔

آپ رح کی اس سنت و تعلیمات کی روشنی میں صاحبزاہ و سجادہ نشین میاں محمد اعجاز عالم نقشبندی نے ایک تقریب کا انعقاد فرمایا جو میاں محمد عالم رح کی سنت کی عکاسی اور اپنے بزرگوں سے محبت کا اظہار تھی۔

اس سالانہ ختم خواجگان کے سفر کا آغاز جناب قبلہ میاں محمد اعجاز عالم نقشبندی صاحب نے دربارِ عالیہ حضور قبلہ میاں محمدعالم رح پر ایک دعائیہ تقریب سے فرمایا جس میں جناب امجد علی بھٹی صاحب، جناب عبد الخالق صاحب، جناب محمد رفیق صاحب، جناب محمد اسلم عرف کاکا اور دیگر عقیدتمند اور مریدین حضرات نے شرکت کی۔

یہ محض ایک سفر ہی نہیں، بلکہ اس میں زندگی اور روحانیت کی بیشمار پہلو شامل تھے۔ اس میں سیر و سیاحت بھی تھی، مزاح و شوخیاں بھی۔ اس میں جہاں ظاہری طور پر ایک دوسرے کے ساتھ سفری معملات تھے وہاں اپنے مرشد کاملین کے ساتھ اپنی ذات میں سفر کرنے کا موقع بھی تھا۔

ہمارا قافلہ جو کہ 15 لوگوں پر مشتمل تھا، 7 جون 2014 کو صبح 8 بجے اپنے سفر پر گامزن ہوا۔ پروگرام کے مطابق، ہم نے پہلے گجرات کے قریب ایک روحانی ہستی حضرت بابا کانواں والی سچی سرکار کے دربار پر حاضری کا شرف حاصل کیا۔ جہاں پر میاں اعجاز صاحب کی قیادت میں ایک جماعت کی صورت درود پاک کا ورد اور ذکر اللہ کا نظرانہ پیش کیا گیا۔

صاحبزادہ میاں محمد اعجاز عالم نقشبندی، امجد علی بھٹی صاحب، رفیق صاحب، عبد الخالق بٹ صاحب، اسلم کاکا دورانِ سفر گجرات کے قریب ایک پیٹرول پمپ پر کچھ دیر کا پڑاوّ
صاحبزادہ میاں محمد اعجاز عالم نقشبندی، امجد علی بھٹی صاحب، رفیق صاحب، عبد الخالق بٹ صاحب، اسلم کاکا دورانِ سفر گجرات کے قریب ایک پیٹرول پمپ پر کچھ دیر کا پڑاوّ
دوران حاضری  صاحبزادہ میاں محمد اعجاز عالم نقشبندی صاحب، امجد علی بھٹی صاحب، عبد الخالق صاحب، دربار بابا کاناوں والی سچی سرکار، نزد گجرات
دوران حاضری صاحبزادہ میاں محمد اعجاز عالم نقشبندی صاحب، امجد علی بھٹی صاحب، عبد الخالق صاحب، دربار بابا کاناوں والی سچی سرکار، نزد گجرات
khatam-Shaban-Malo-08-06-2014-3
جناب اسلم کاکا صاحب، دربار کانواں والی سرکار پر حاضری کے موقعہ پر

بعد ازاں، ہمارا قافلہ اپنی دوسری منزل ہیڈ رسول براستہ سرائے عالمگیر میں واقع گورنمنٹ کالج آف ٹیکنالوجی پہنچا جہاں وائس پرنسپل جناب محمد امجد رفیق صاحب نے ہمیں خوش آمدید کہا۔ جناب محمد امجد صاحب ، جناب محمد رفیق صاحب کے فرزند اور میاں اعجاز صاحب کے استادِ محترم ہیں۔یہ کالج سنہ 1912 سے مقامی طلبا میں علم کی شمعیں روشن کر رہا ہے اور حال ہی میں 2012 کو 100 سالہ تقریبات بھی منائی گئی تھیں۔

صاحبزادہ میاں محمد اعجاز عالم صاحب اپنے استادِ محترم وائس پرنسپل  جناب محمد امجد صاحب، بمقام ہیڈ رسول، منڈی بہاوّ دین
صاحبزادہ میاں محمد اعجاز عالم صاحب اپنے استادِ محترم وائس پرنسپل جناب محمد امجد صاحب، بمقام ہیڈ رسول، منڈی بہاوّ دین

khatam-Shaban-Malo-08-06-2014-5 khatam-Shaban-Malo-08-06-2014-9 khatam-Shaban-Malo-08-06-2014-11جناب پرنسپل صاحب نے بہت شوق اور پُر خلوص انداز سے ہماری خاطر تواضع کی۔ یہاں قیام و طعام کے بعد یہ قافلہ، اپنی منزلِ مقصود یعنی اپنے آبائی گاؤں “مالو- نروال” کی جانب گامزن ہوا جہاں جناب محمد گلریز صاحب نے ہمیں خوش آمدید کہا اور ایک پرتپاک استقبال کیا۔ یہیں پر ہمارے پڑاؤ کا اہتمام بھی کیا گیا تھا۔

رات گئے تک گلریز صاحب اور ان کے اہلِ خانہ کے ساتھ ہم نے اپنے جدِ امجد اور بزرگان دین کی تعلیمات اور ان کی طرزِ زندگی پر اپنے اپنے انداز سے تذکرہ کیا۔

جون 8، 2014

صبح کے اُجالے میں گاؤں کی صاف فضا، لہلاتے کھیت، دریا اور پہاڑ ایک پُر کیف نظارہ پیش کر رہے تھے۔ دریائے جہلم کی سیر اور ٹیوب ویل میں نہا کر تازہ دم ہونے کے بعد ختم خواجگان و نعت محفل کی تقریب کا آغاز ہوا۔ تقریب میں اپنے بزرگان کو سہرا بندی، ختم خواجگان، تلاوتِ قرآن پاک، حمد و نعت، درود و سلام کا نظرانہ پیش کیا گیا۔

khatam-Shaban-Malo-08-06-2014-20 khatam-Shaban-Malo-08-06-2014-27khatam-Shaban-Malo-08-06-2014-32 khatam-Shaban-Malo-08-06-2014-34 khatam-Shaban-Malo-08-06-2014-40 khatam-Shaban-Malo-08-06-2014-59 khatam-Shaban-Malo-08-06-2014-60khatam-Shaban-Malo-08-06-2014-56 khatam-Shaban-Malo-08-06-2014-57 khatam-Shaban-Malo-08-06-2014-58

تقریب کے اختمام پر اپنے عزیز و اقارب سے الوداعی ملاقات کی گئی اور پھر اپنی منزلِ مقصود لاہور کی جانب رختِ سفراختیار کیا گیا۔

ہم جناب محمد گلزار صاحب اور ان کے اہلِ خانہ کے بیحد مشکور ہیں جنہوں نے محبت اور خلوص کے ساتھ بزرگانِ دین کی خدمت میں اپنی کاوش کا اظہار کیا۔

دعا ہے اللہ ربُ العزت سے کہ جناب محمد گلزار اور محمد امجد رفیق صاحبان، ان کے اہلِ خانہ اور تمام اہلِ علاقہ کے علم و عمل، زندگی، صحت، عمر اور رزق میں برکتیں اور دونوں جہانوں کی راحتیں عطا اور اللہ تعالیٰ ان بزرگوں کے طفیل ہمارے ایمانوں میں استقامت عطا فرمائے اور ان اولیاء اللہ کے صدقے ہمیں صراطِ مستقیم پر گامزن اور دین و دنیا کی کامیابی عطا فرمائے- آمین

فوٹو گیلری



صاحبزادہ میاں محمد اعجاز عالم نقشبندی


صاحبزادہ میاں محمد اعجاز عالم نقشبندی


نعت خوان: محمد فیاض نقشبندی


درود و سلام


دعائے خیر غلام عباس کے گھر